الیشبع

مقدسہ الیشبع
Champaigne visitation.jpg
الیشبع (بائیں) مریم کو ملنے آئیں۔
راست باز
پیدائشپہلی صدی ق م
حبرون
وفاتپہلی صدی ق م (یا ابتدائی ق م)
(ممکنہ حبرون)
محترم دررومن کاتھولک کلیسیا
مشرقی راسخ الاعتقاد کلیسیا
اورینٹل راسخ الاعتقاد کلیسیا
انگلیکان کلیسیا
لوتھری کلیسیا
تمام اسلام
قداستپری-کانگریگریشن
تہوار5 نومبر (رومن کیتھولک، لوتھری)
5 ستمبر (مشرقی راسخ الاعتقاد، انگلیکان)
سرپرستیحاملہ خواتین

الیشبع (یونانی: Ἐλισάβετ یا الیشبع؛ ماخذ عبرانی: אֱלִישֶׁבַע / אֱלִישָׁבַע "خُدا حلف اٹھاتا ہے "؛ معیاری عبرانی: Elišévaʿ Elišávaʿ، طبری عبرانیʾĔlîšéḇaʿ ʾĔlîšāḇaʿ؛ عربی: أليصابات) لوقا کی انجیل کے مطابق زکریا کی بیوی اور یوحنا اصطباغی کی ماں تھیں۔

مسیحیت میں

الیشبع زکریا کاہن کی بیوی جو خود بھی ہارون کی اولاد میں سے تھی۔[1] یہ میاں بیوی بڑے خدا پرست اور عمر رسیدہ تھے لیکن اُن کے ہاں اولاد نہ تھی۔ ایک مرتبہ کہانت کا کام انجام دینے کے لیے زکرؔیا کے نام قرعہ نکلا تو مَقدِس میں فرشتے نے اُسے خبر دی کہ اُس کی بیوی کے بیٹا ہوگا اور اُس کا نام یوحنا رکھیں۔[2] اُس کے بعد فرشتے نے مُقدسہ مریم کو یسوع کی خبر دی[3] اور بتایا کہ اُن کی رشتہ دار الیشبع کے بھی بڑھاپے میں بیٹا ہوگا۔[4] اس پر مُقدسہ مریم پہاڑی علاقے کے یہوداہ کے ایک شہر گئیں۔ جب اُنہوں نے الیشبع کو سلام کیا تو اس کا بچہ پیٹ میں خوشی سے اُچھلا۔ اُس نے مریم سے کہا ”مجھ پر یہ فضّل کہاں سے ہوا کہ میرے خداوند کی ماں میرے پاس آئی“۔ اِس کے جواب میں مُقدسہ مریم نے ایک گیت میں خدا کی تمجید کی۔[5]

Other Languages